Search Results for: قيامة ارطغرل الحلقة 283

  • All
  • People
  • Stories
  • Tags

Stories that match your search ...

More Results

51 y

 

""

"ہمارے دشمن کی طاقت ہماری بہادری کی علامت ہیں ارطغرل غازی"

ہمارے دشمن کی طاقت 
ہماری  بہادری کی علامت ہیں  
 
                                                                                           ارطغرل غازی

Dushman

7 Love
2 Share

""

"جنگ میں پیٹھ پھیرنا مسلمانوں کی عادت نہیں ارطغرل غازی"

جنگ میں پیٹھ پھیرنا مسلمانوں کی عادت نہیں 
ارطغرل غازی

#BuddhaPurnima

3 Love

""

"جب ملک میں نااہل حکمران پیدا ہونے لگے تو سمجھو کہ قیامت قریب ہے ارطغرل غازی"

جب ملک میں نااہل حکمران پیدا ہونے لگے تو سمجھو کہ قیامت قریب ہے 
ارطغرل غازی

#BuddhaPurnima

4 Love

""

"آج کل وہ لوگ بھی سٹیٹس پے ارطغرل کو لگاتے ہیں۔ جن کا اپنا کردار کردوغلو جیسا ہے......"

آج کل وہ لوگ بھی سٹیٹس پے ارطغرل کو لگاتے ہیں۔
جن کا اپنا کردار کردوغلو جیسا ہے......

 

8 Love

""

"کسی جنگ میں اگر میں پیٹھ دکھانے کا سوچو تو خدا مجھے کسی ناموس کی شمشیر سے نیست و نابود کر دے ارطغرل غازی"

کسی جنگ میں اگر میں پیٹھ دکھانے کا سوچو 
تو خدا مجھے کسی ناموس کی شمشیر سے نیست و نابود کر دے 
ارطغرل غازی

#BuddhaPurnima

6 Love

""

"اگر تم نے دشمن کو اپنا وطن ہی نہیں بلکہ ایک پتھر کا ٹکڑا بھی رکھنے دیا تو مصائب ہم پر آ پڑیں گے۔ (ارطغرل غازی)"

اگر تم نے دشمن کو اپنا وطن ہی نہیں بلکہ 
ایک پتھر کا ٹکڑا بھی رکھنے دیا تو مصائب ہم پر آ پڑیں گے۔

                                                          (ارطغرل غازی)

#sunlight

8 Love

""

"#Motivation #बजट 2019 में पीएचडी और इसके बाद के पाठ्यक्रमों के लिए फेलोशिप और छात्रवृत्तियों में 2014-2015 से लगातार कटौती हो रही है. 2019 के बजट में इन पाठ्यक्रमों में एससी छात्रों के लिए यह रकम 602 करोड़ रुपये से घटाकर 283 करोड़ रुपये जबकि एसटी छात्रों के लिए यह रकम 439 करोड़ रुपये से घटाकर 135 करोड़ रुपये कर दी गई है."

#Motivation #बजट 2019 में पीएचडी और इसके बाद के पाठ्यक्रमों के लिए फेलोशिप और छात्रवृत्तियों में 2014-2015 से लगातार कटौती हो रही है. 2019 के बजट में इन पाठ्यक्रमों में एससी छात्रों के लिए यह रकम 602 करोड़ रुपये से घटाकर 283 करोड़ रुपये जबकि एसटी छात्रों के लिए यह रकम 439 करोड़ रुपये से घटाकर 135 करोड़ रुपये कर दी गई है.

#बजट

4 Love
1 Share

""

"السلام علیکم اس پوسٹ پر آپ کو دیریلش ارطغرل کے مکمل پانچوں سیزن HD کے فیس بک لنکس، #SEASON 1️⃣ Ertugrul https://www.facebook.com/groups/516997385785439/permalink/588512948633882/ __________________________________________ #SEASON 2️⃣ Ertugrul https://www.facebook.com/groups/516997385785439/permalink/586260702192440/ ___________________________________________ #SEASON 3️⃣ Ertugrul https://www.facebook.com/groups/516997385785439/permalink/594037088081468/ ___________________________________________ #SEASON 4️⃣ Ertugrul https://m.facebook.com/groups/516997385785439?view=permalink&id=594899427995234 ___________________________________________ #SEASON 5️⃣ Ertugrul https://m.facebook.com/groups/516997385785439?view=permalink&id=603628027122374"

السلام علیکم
 اس پوسٹ پر آپ کو
 دیریلش ارطغرل کے مکمل پانچوں سیزن HD کے فیس بک لنکس،

#SEASON 1️⃣ Ertugrul 

https://www.facebook.com/groups/516997385785439/permalink/588512948633882/
__________________________________________

#SEASON 2️⃣ Ertugrul 
https://www.facebook.com/groups/516997385785439/permalink/586260702192440/
___________________________________________

#SEASON 3️⃣ Ertugrul 
https://www.facebook.com/groups/516997385785439/permalink/594037088081468/
___________________________________________

#SEASON 4️⃣ Ertugrul 
https://m.facebook.com/groups/516997385785439?view=permalink&id=594899427995234
___________________________________________

#SEASON 5️⃣ Ertugrul
https://m.facebook.com/groups/516997385785439?view=permalink&id=603628027122374

☝️☝️☝️

4 Love

""

". ’ارتغرل‘ ترکی کے خانہ بدوش قبیلے ’ قائی‘ کی کہانی ہے ۔ قائی قبیلہ ایک جنگجو قبیلہ ہے جو ایک طرف بے رحم موسموں کے نشانے پر ہے اور دوسری جانب منگولوں اور صلیبیوں کے نشانے پر ہے ۔ ہمت و جرات کی یہ عجیب داستان ہے کہ چرواہوں کا یہ خانہ بدوش قبیلہ جو جاڑے کے بے رحم موسم میں قحط سے بچنے کے لیے حلب کے امیر سے ایک زرخیز چراگاہ میں قیام پزیر ہونے کی اجازت مانگ رہا ہوتا ہے آگے چل کر ایک ایسی سلطنت کی بنیاد رکھ دیتاہے جو آٹھ سو سال قائم رہتی ہے ۔ ارطغرل قائی قبیلے کے سردار سلمان شاہ کا بیٹا ہے ۔ وہ منگولوں سے بھی لڑتا ہے اور صلیبیوں سے بھی ۔ وہ اوغوز ترک قبائل کو یوں ایک لڑی میں سمو دیتا ہے کہ پھر چرواہوں کے اس قبیلے کی ایک اپنی سلطنت ہوتی ہے اور ارطغرل کا بیٹا عثمان اس سلطنت عثمانیہ کا پہلا بادشاہ ہوتا ہے۔چرواہوں کا قائی قبیلہ ایک عظیم الشان سلطنت کی بنیاد کیسے رکھتا ہے اس غیر معمولی جدو جہد کی داستان کا نام ’ ارطغرل ‘ ہے۔ یہ ڈرامہ 60 سے زائد ممالک میں ٹی وی چینلز پر دکھایا جا رہا ہے۔ فنی اعتبار سے تو یہ ڈرامہ ایک شاہکار ہے ہی ، اس کی ایک اور خوبی بھی ہے۔ یہ مسلمانوں پر مسلط کردہ احساس کمتری کا طلسم کدہ توڑ کر پھینک دیتا ہے ۔ خانہ بدوش قبیلے کے اس ڈرامے کی چند اقساط دیکھ کر آپ کے اندر سے وہ احساس کمتری دھیرے دھیرے ختم ہونا شروع ہو جاتا ہے جو مغرب اور اس کے رضاکاروں نے بڑے اہتمام سے مسلم سماج میں پھیلا رکھا ہے ۔ یہاں تک کہ ایک وقت آتا ہے کہ آپ کو مسلم تہذیب کے رنگوں پر فخر محسوس ہونا شروع ہو جاتا ہے۔ اسے ترکی کا ’ سوفٹ ایٹم بم‘ ہونے کا طعنہ دیا جا رہا ہے ۔ نیویارک ٹائمز نے لکھا کہ ’ ارطغرل‘ ڈرامے سے پتا چلتا ہے کہ ترکی کے عزائم کیا ہیں اور وہ خود کو ایک بڑی سلطنت کے طور پر دیکھنا چاہتا ہے ۔ نیویارک ٹائمز کی فرد جرم کا دلچسپ حصہ یہ ہے کہ چونکہ یہ ڈرامہ ترکی میں بہت زیادہ مقبول ہو چکا ہے اس لیے ثابت ہوا کہ ترکی کے عوام بھی اس ’’ جرم‘‘ میں اردوان کے ساتھ ہیں ۔ یعنی دونوں مل کر مسلمانوں کی عظیم سلطنت کا خواب دیکھ رہے ہیں ۔ اردوان نے ’ ارطغرل کے خلاف ہونے والے اس سارے پروپیگنڈے کے جواب میں صرف ایک فقرہ کہا ہے : ’’جب تک شیر اپنی تاریخ خود نہیں لکھیں گے تب تک شکاری ہی ہیرو بنے رہیں گے"

. ’ارتغرل‘ ترکی کے خانہ بدوش قبیلے ’ قائی‘ کی کہانی ہے ۔ قائی قبیلہ ایک جنگجو قبیلہ ہے جو ایک طرف بے رحم موسموں کے نشانے پر ہے اور دوسری جانب منگولوں اور صلیبیوں کے نشانے پر ہے ۔ ہمت و جرات کی یہ عجیب داستان ہے کہ چرواہوں کا یہ خانہ بدوش قبیلہ جو جاڑے کے بے رحم موسم میں قحط سے بچنے کے لیے حلب کے امیر سے ایک زرخیز چراگاہ میں قیام پزیر ہونے کی اجازت مانگ رہا ہوتا ہے آگے چل کر ایک ایسی سلطنت کی بنیاد رکھ دیتاہے جو آٹھ سو سال قائم رہتی ہے ۔ ارطغرل قائی قبیلے کے سردار سلمان شاہ کا بیٹا ہے ۔ وہ منگولوں سے بھی لڑتا ہے اور صلیبیوں سے بھی ۔ وہ اوغوز ترک قبائل کو یوں ایک لڑی میں سمو دیتا ہے کہ پھر چرواہوں کے اس قبیلے کی ایک اپنی سلطنت ہوتی ہے اور ارطغرل کا بیٹا عثمان اس سلطنت عثمانیہ کا پہلا بادشاہ ہوتا ہے۔چرواہوں کا قائی قبیلہ ایک عظیم الشان سلطنت کی بنیاد کیسے رکھتا ہے اس غیر معمولی جدو جہد کی داستان کا نام ’ ارطغرل ‘ ہے۔
یہ ڈرامہ 60 سے زائد ممالک میں ٹی وی چینلز پر دکھایا جا رہا ہے۔
فنی اعتبار سے تو یہ ڈرامہ ایک شاہکار ہے ہی ، اس کی ایک اور خوبی بھی ہے۔ یہ مسلمانوں پر مسلط کردہ احساس کمتری کا طلسم کدہ توڑ کر پھینک دیتا ہے ۔ خانہ بدوش قبیلے کے اس ڈرامے کی چند اقساط دیکھ کر آپ کے اندر سے وہ احساس کمتری دھیرے دھیرے ختم ہونا شروع ہو جاتا ہے جو مغرب اور اس کے رضاکاروں نے بڑے اہتمام سے مسلم سماج میں پھیلا رکھا ہے ۔ یہاں تک کہ ایک وقت آتا ہے کہ آپ کو مسلم تہذیب کے رنگوں پر فخر محسوس ہونا شروع ہو جاتا ہے۔
اسے ترکی کا ’ سوفٹ ایٹم بم‘ ہونے کا طعنہ دیا جا رہا ہے ۔ نیویارک ٹائمز نے لکھا کہ ’ ارطغرل‘ ڈرامے سے پتا چلتا ہے کہ ترکی کے عزائم کیا ہیں اور وہ خود کو ایک بڑی سلطنت کے طور پر دیکھنا چاہتا ہے ۔ نیویارک ٹائمز کی فرد جرم کا دلچسپ حصہ یہ ہے کہ چونکہ یہ ڈرامہ ترکی میں بہت زیادہ مقبول ہو چکا ہے اس لیے ثابت ہوا کہ ترکی کے عوام بھی اس ’’ جرم‘‘ میں اردوان کے ساتھ ہیں ۔ یعنی دونوں مل کر مسلمانوں کی عظیم سلطنت کا خواب دیکھ رہے ہیں ۔
اردوان نے ’ ارطغرل کے خلاف ہونے والے اس سارے پروپیگنڈے کے جواب میں صرف ایک فقرہ کہا ہے : ’’جب تک شیر اپنی تاریخ خود نہیں لکھیں گے تب تک شکاری ہی ہیرو بنے رہیں گے

#

9 Love

""

"मेरे शब्द स्वरूपी सतगुरू हैं, राधास्वामी के मंजूरे नज़र । वे मेहर दृष्टि जिसको हेरे,पहुँचातें हैं उसको निज घर ।।टेर।। जो दर्श करे दिल दीदे से, छवि बस जाये उसके अंतर । नश्वर छवियाँ सब धुल जावें,घट में पावे स्वामी की ख़बर (1) वह त्याग चले पिण्ड ब्रह्माण्ड को,सूरत चढ़ जावे उसकी अधर । निज महल में वो बासा पावे ,राधास्वामी द्याल मिले निज वर (2) वे शब्द गोद में झूल रहे, हरदम बसते हैं इधर उधर । सूरत तजे काल माया डोरी, उन संग भवसागर जाती तर (3) जो अब भी संग में नहीं लागे,खो डालेगी वो अपनी क़दर । राधास्वामी द्याल को नहीं पावे ,ठोकर खावेगी वो दर दर (4) *राधास्वामी* राधास्वामी प्रीति बानी 4-283"

मेरे शब्द स्वरूपी सतगुरू हैं, राधास्वामी के मंजूरे नज़र ।
वे मेहर दृष्टि जिसको हेरे,पहुँचातें हैं उसको निज घर ।।टेर।।

जो दर्श करे दिल दीदे से, छवि बस जाये उसके अंतर ।
नश्वर छवियाँ सब धुल जावें,घट में पावे स्वामी की ख़बर (1)

वह त्याग चले पिण्ड ब्रह्माण्ड को,सूरत चढ़ जावे उसकी अधर ।
निज महल में वो बासा पावे ,राधास्वामी द्याल मिले निज वर (2)

वे शब्द गोद में झूल रहे, हरदम बसते हैं इधर उधर ।
सूरत तजे काल माया डोरी, उन संग भवसागर जाती तर (3)

जो अब भी संग में नहीं लागे,खो डालेगी वो अपनी क़दर ।
राधास्वामी द्याल को नहीं पावे ,ठोकर खावेगी वो दर दर (4)

                   *राधास्वामी*           
राधास्वामी प्रीति बानी 4-283

छवि बस जाए ।

3 Love

""

"#BestFriendsDay یہ نوٹ آج کے انقلاب روزنامے میں شایع "ترکی ڈرامہ ارطغرل غازی کی پوری دنیامیں شھرت و مقبولیت کیوں ؟ سے مثعلق عرضداشت ھے کہ اس سیریل کو "ڈرامہ" کھ کر مضمون نگار ڈاکٹر ممتاز عالم رضوی نے مجھے امید قوی ھے کہ اس اسلامی تاریخ کے زریں باب کی قصداً توہین نہیں کی ہوگی بلکہ ادپ کی دنیا میں صنف ڈرامہ میں رکھنے کی سہوا بھول ہے۔ در حقیقت یہ سیریل اسلام کے خلاف دشمنان اسلام کی ساذشوں اور مسلمانوں کے اندر منافقین کی طرز زندگی اور اس کے سنگین نتائج کا پردہ فاش کرتا ھے۔ اس سے امت مسلمہ کو بقول علامہ اقبال : پتہ نہیں نام کیا ھے اسکا، خدا فریبی کہ خود فریبی، عمل سے خارج ھوا مسلماں بنا کے خود تقدیر کا بہانا۔ کی تعبیر کی ایک کامیاب کوشش کہنا بہتر ھے۔"

#BestFriendsDay یہ نوٹ آج کے انقلاب روزنامے میں شایع 
"ترکی ڈرامہ ارطغرل غازی کی پوری دنیامیں شھرت و مقبولیت کیوں ؟
سے مثعلق عرضداشت ھے کہ اس سیریل کو "ڈرامہ" کھ کر مضمون نگار ڈاکٹر ممتاز عالم رضوی نے مجھے امید قوی ھے کہ اس اسلامی تاریخ کے زریں باب کی قصداً توہین نہیں کی ہوگی بلکہ ادپ کی دنیا میں صنف ڈرامہ میں رکھنے کی سہوا بھول ہے۔
در حقیقت یہ سیریل اسلام کے خلاف دشمنان اسلام کی ساذشوں اور مسلمانوں کے اندر منافقین کی طرز زندگی اور اس کے سنگین نتائج کا پردہ فاش کرتا ھے۔ اس سے امت مسلمہ کو بقول علامہ اقبال :
پتہ نہیں نام کیا ھے اسکا، خدا فریبی کہ خود فریبی،
عمل سے خارج ھوا مسلماں بنا کے خود تقدیر کا بہانا۔
کی تعبیر کی ایک کامیاب کوشش کہنا بہتر ھے۔

#Bestfriendsday

10 Love
2 Share

""

"*बीते 8 दिनों में कोरोना केस की समीक्षा* 1. 21मार्च ( 283 केस ) - 22 मार्च ( 396 केस ) वृद्धि 39.92 %f 2. 22 मार्च ( 396 केस ) - 23 मार्च ( 468 केस ) वृद्धि 18.18 % 3. 23 मार्च ( 468 केस ) - 24 मार्च ( 566 केस ) वृद्धि 23.43 % 4. 24 मार्च ( 566 केस ) - 25 मार्च ( 645 केस ) वृद्धि 13.95 % 5. 25 मार्च ( 645 केस ) - 26 मार्च ( 720 केस ) वृद्धि 11.62 % 6. 26 मार्च ( 720 केस ) - 27 मार्च ( 886 केस ) वृद्धि 12.30 % 7. 27 मार्च ( 886 केस ) - 28 मार्च ( 991 केस ) वृद्धि 12 .10 % 8. 28 मार्च ( 991 केस ) - 29 मार्च ( 1040 केस ) वृद्धि 5 .10 % यह स्थिति 29 मार्च दोपहर 12 बजे तक की है । कोरोना के केस के प्रतिशत में आई गिरावट लाक डाउन का नतीजा है । अगर हम लाक डाउन का पूर्ण रुप से पालन करें तो इस महामारी से बच सकते हैं , इसलिए *ध्यान रहे घर पर रहे और सिर्फ घर पर रहे* केवल हम सरकार व प्रशासन पर निर्भर ना रहे केवल घर पर रहकर हम सबका बचाव कर सकते हैं । 🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏 sandeep ajanavii"

*बीते 8 दिनों में कोरोना केस की समीक्षा*

1.  21मार्च ( 283 केस  ) - 
22 मार्च  ( 396 केस )
वृद्धि 39.92 %f

2.  22 मार्च ( 396 केस  ) - 
 23 मार्च ( 468 केस )
 वृद्धि 18.18 %

3.  23 मार्च ( 468 केस  ) - 
 24  मार्च ( 566 केस )
  वृद्धि 23.43 %

4.  24 मार्च ( 566 केस  ) - 
25  मार्च ( 645 केस )
  वृद्धि  13.95 %

5.  25 मार्च ( 645 केस  ) - 
 26 मार्च ( 720 केस )
 वृद्धि  11.62 %

6.  26 मार्च  ( 720 केस  ) - 
 27 मार्च ( 886 केस )
 वृद्धि 12.30 %

7. 27  मार्च ( 886  केस ) - 
 28  मार्च ( 991 केस )
वृद्धि 12 .10 %

8. 28  मार्च ( 991 केस ) - 
 29  मार्च ( 1040 केस )
वृद्धि 5 .10 % यह स्थिति 29 मार्च दोपहर 12 बजे तक की है ।

कोरोना के केस के प्रतिशत में आई गिरावट लाक डाउन का नतीजा है । अगर हम लाक डाउन का पूर्ण रुप से पालन करें तो इस महामारी से बच सकते हैं , इसलिए *ध्यान रहे घर पर रहे और सिर्फ घर पर रहे* केवल हम सरकार व प्रशासन पर निर्भर ना रहे केवल घर पर रहकर हम सबका बचाव कर सकते हैं  । 🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏🙏

sandeep ajanavii

 

17 Love

""

"مجھے ارطغرل ڈرامہ میں جو سب سے اچھی بات لگی وہ انکا دعا مانگنا کا طریقہ ہے جب بھی دعا مانگتے ہیں۔ کہتےہیں یا ﷲﷻ حضرت ابراہیمؑ کو آگ سے محفوظ رکھنے والے حضرت یوسف ؑ کو اندھیرے کنواں سے نکالنے والے حضرت یونس ؑ کو مچھلی کے پیٹ میں محفوظ رکھنے والے حضرت موسیؑ کو فرعون سے بچانے والے ہمیں بھی تمام مشکلات ۔پریشانیوں سے ایسے ہی محفوظ فرما ۔جیسے تونے اپنے بندوں کو محفوظ فرمایا ۔ اور ابن العربی کا جب بھی کسی بیمار کا علاج کرنا تو کہنا یا شافی اسم کی برکت سے اس مریض کو شفا ملے گی ۔ یہ دوا میں یا شافی اسم کا ورد کرتے ہوئے بنائوگا تو یہ دوا مریض کو جلدی شفا دیگی۔ بہت خوبصورت طریقہ انداز دعا ۔ آئے ہم سب بھی ایسی ہی دعا کرتے ہیں کہ یا ﷲﷻ حضرت ابراہیمؑ کو آگ سے محفوظ رکھنے والے حضرت یوسف ؑ کو اندھیرے کنواں سے نکالنے والے حضرت یونس ؑ کو مچھلی کے پیٹ میں محفوظ رکھنے والے حضرت موسیؑ کو فرعون سے بچانے والے ہمیں بھی تمام مشکلات ۔پریشانیوں سے ایسے ہی محفوظ فرما ۔جیسے تونے اپنے بندوں کو محفوظ فرمایا ۔ یہ جو کرونا کی وبا پھیلی ہوئی ہے یا شافی اسم کی برکت سے ہمیں اس وبا سے محفوظ فرما ۔ ہمارے گناہوں کو معاف فرمادیں ۔ ہمیں بخش دے سیدہ"

مجھے ارطغرل ڈرامہ میں جو سب سے اچھی بات لگی وہ انکا دعا مانگنا کا طریقہ ہے
جب بھی دعا مانگتے ہیں۔ کہتےہیں
 یا ﷲﷻ
حضرت ابراہیمؑ کو آگ سے محفوظ رکھنے والے
حضرت یوسف ؑ کو اندھیرے کنواں سے نکالنے والے 
حضرت یونس ؑ کو مچھلی کے پیٹ میں محفوظ رکھنے والے
حضرت موسیؑ کو فرعون سے بچانے والے
ہمیں بھی تمام مشکلات ۔پریشانیوں سے ایسے ہی محفوظ فرما ۔جیسے تونے اپنے بندوں کو محفوظ فرمایا ۔ 
اور ابن العربی کا جب بھی کسی بیمار کا علاج کرنا تو کہنا یا شافی اسم کی برکت سے اس مریض کو شفا ملے گی ۔ یہ دوا میں یا شافی اسم کا ورد کرتے ہوئے بنائوگا تو یہ دوا مریض کو جلدی شفا دیگی۔
بہت خوبصورت طریقہ انداز دعا ۔ 
آئے ہم سب بھی ایسی ہی دعا کرتے ہیں کہ
یا ﷲﷻ
حضرت ابراہیمؑ کو آگ سے محفوظ رکھنے والے
حضرت یوسف ؑ کو اندھیرے کنواں سے نکالنے والے 
حضرت یونس ؑ کو مچھلی کے پیٹ میں محفوظ رکھنے والے
حضرت موسیؑ کو فرعون سے بچانے والے
ہمیں بھی تمام مشکلات ۔پریشانیوں سے ایسے ہی محفوظ فرما ۔جیسے تونے اپنے بندوں کو محفوظ فرمایا ۔ یہ جو کرونا کی وبا پھیلی ہوئی ہے  یا شافی اسم کی برکت سے ہمیں اس وبا سے محفوظ فرما ۔ ہمارے گناہوں کو معاف فرمادیں ۔ ہمیں بخش دے 

سیدہ

 

7 Love

""

"بسم اللہ الرحمٰن الرحیم اسلامی تاریخ کے زریں دور خصوصاً مدنی اسلای معاشرہ،"خلافتِ راشدہ" اور ارطغرل غازی سے لےکر خلافتِ عثمانیہ کی ترکوں کی تاریخ گزشتہ دنوں وایرس کے لاک ڈاؤن کے دوران سیریل کے تقریباً 250 سے زائد ایپیسوڈ دیکھنے کے بعد میں نےجو نتائج اخذ کئے وہ حسب ذیل ہیں : # انسانی فطرت اور معاشرہ میں نیکی اور بدی ساتھ ساتھ چلتی رہتی ہیں۔ زمین پر ان دونوں کے درمیان توازن قائم رکھنے کے لیے کچھ لوگوںکو مسلسل جدو جہد جاری رکھنا لازم ھے۔ # اللہ کی زمین پر عدل و انصاف قائم رکھنا اور اللہ کے حکم کی تعمیل کرنا ہر انسان خصوصاً ایمان والوں پر لازم ھے۔ # کچھ انسان ہر ایک دور میں نفس پرست، خود غرض، لالچی، تنگ نظر یعنی کوتاہ نظر، مکار اور عیار طبیعت یا مزاج کے ھمیشہ رہا کرتے ہیں، وہ ہر ایک مذہب میں پایے جاتے ہیں جو منافق کہلاتے ہیں، ان کو بہت جلد دشمنان غداری کے لیے اکسا لیا کرتے ہیں، لہذا یہ بہت ہی نقصاندہ ثابت ہوا کرتے ہیں۔ # جان و مال کی قربانیوں کے بغیر کبھی کوی انقلاب یا سماجی تبدیلی ناممکن ھے۔ انقلاب کے لیے منظم جد وجہد ناگذیر ھوتی ھے اور یہ اسلام کی اصطلاح میں "جہاد فی سبیل اللہ" کہلاتی ھے۔ یہ ہر ایک ایمان والے پر فرض عین ھے، اس میں کسی فتویٰ جاری ہونے کا انتظار کفر کے برابر ہوتا ہے، البتہ شوری کے ذریہ سے لیا گیا فیصلہ اللہ سبحانہ وتعالیٰ کے حکم کی تعمیل کرنا ھے۔ # اللہ کی زمین پر عد ل قائم رکھنے اور فساد کی بیخ کنی ہر ایک ایمان والے کی زندگی کا حصہ یا مشن ہونا چاہئے۔ # آخر میں یہ بھی ذہن نشین رکھنا لازم ھے کہ بھیڑ یعنی بڑی تعداد سے کبھی کوی انقلاب نہیں آتا بلکہ بلند عزائم، جراءت، نڈرتا اور با مقصد زندگی ھی اللہ سبحانہ وتعالیٰ کی توفیق اور بے لوث قربانیوں و انتہک جدوجھد سے ہی "فتح" حاصل ہو سکتی ھے۔"

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
اسلامی تاریخ کے زریں دور خصوصاً مدنی اسلای معاشرہ،"خلافتِ راشدہ" اور ارطغرل غازی سے لےکر خلافتِ عثمانیہ کی ترکوں کی تاریخ گزشتہ دنوں وایرس کے لاک ڈاؤن کے دوران سیریل کے تقریباً 250 سے زائد ایپیسوڈ دیکھنے کے بعد  میں نےجو نتائج اخذ کئے وہ حسب ذیل ہیں :
# انسانی فطرت اور معاشرہ میں نیکی اور بدی ساتھ ساتھ چلتی رہتی ہیں۔ زمین پر ان دونوں کے درمیان توازن قائم رکھنے کے لیے کچھ لوگوںکو مسلسل جدو جہد جاری رکھنا لازم ھے۔
# اللہ کی زمین پر عدل و انصاف قائم رکھنا اور اللہ کے حکم کی تعمیل کرنا ہر انسان خصوصاً ایمان والوں پر لازم ھے۔
# کچھ انسان ہر ایک دور میں نفس پرست، خود غرض، لالچی، تنگ نظر یعنی کوتاہ نظر، مکار اور عیار طبیعت یا مزاج کے ھمیشہ رہا کرتے ہیں، وہ ہر ایک مذہب میں پایے جاتے ہیں جو منافق کہلاتے ہیں، ان کو بہت جلد دشمنان غداری کے لیے اکسا لیا کرتے ہیں، لہذا یہ بہت ہی نقصاندہ ثابت ہوا کرتے ہیں۔
# جان و مال کی قربانیوں کے بغیر کبھی کوی انقلاب یا سماجی تبدیلی ناممکن ھے۔ انقلاب کے لیے منظم جد وجہد ناگذیر ھوتی ھے اور یہ اسلام کی اصطلاح میں "جہاد فی سبیل اللہ" کہلاتی ھے۔  یہ ہر ایک ایمان والے پر فرض عین ھے، اس میں کسی فتویٰ جاری ہونے کا انتظار کفر کے برابر ہوتا ہے، البتہ شوری کے ذریہ سے لیا گیا فیصلہ اللہ سبحانہ وتعالیٰ کے حکم کی تعمیل کرنا ھے۔
# اللہ کی زمین پر عد ل  قائم رکھنے اور فساد کی بیخ کنی ہر ایک ایمان والے کی زندگی کا حصہ یا مشن ہونا چاہئے۔
# آخر میں یہ بھی ذہن نشین رکھنا لازم ھے کہ بھیڑ یعنی بڑی تعداد سے کبھی کوی انقلاب نہیں آتا بلکہ بلند عزائم، جراءت، نڈرتا اور با مقصد زندگی ھی اللہ سبحانہ وتعالیٰ کی توفیق اور بے لوث قربانیوں و انتہک جدوجھد سے ہی "فتح" حاصل ہو سکتی ھے۔

#Vo_mere_pass_aaye

10 Love
4 Share