- یوں راہوں میں بہک کے اگر تم نہیں جاتے ایک ساتھ ہ | اردو شاعری

"- یوں راہوں میں بہک کے اگر تم نہیں جاتے ایک ساتھ ہم تمہارے جنم دن کو مناتے ناجانے کس کی پھوک سے اب بجھتی ہوگی وہ موم بتی جو کبھی ہم مان سے تھے بھجاتے نہ جانے کس طرح سے ہاتھ ہاتھ سے چھوٹے ہاتھ سب سے پہلے جو تھے مجھے کیک کھلاتے تم پاس جو ہوتے تو اس برس ہم تحفے میں تم پر لکھے ہوئے تم ہی کو شعر سناتے"

- یوں راہوں میں بہک کے اگر تم نہیں جاتے
ایک ساتھ ہم تمہارے جنم دن کو مناتے
ناجانے کس کی پھوک سے اب بجھتی ہوگی وہ
موم بتی جو کبھی ہم مان سے تھے بھجاتے
نہ جانے کس طرح سے ہاتھ ہاتھ سے چھوٹے
ہاتھ سب سے پہلے جو تھے  مجھے کیک کھلاتے
تم پاس جو ہوتے تو اس برس ہم تحفے میں
تم پر لکھے ہوئے تم ہی کو شعر سناتے

- یوں راہوں میں بہک کے اگر تم نہیں جاتے ایک ساتھ ہم تمہارے جنم دن کو مناتے ناجانے کس کی پھوک سے اب بجھتی ہوگی وہ موم بتی جو کبھی ہم مان سے تھے بھجاتے نہ جانے کس طرح سے ہاتھ ہاتھ سے چھوٹے ہاتھ سب سے پہلے جو تھے مجھے کیک کھلاتے تم پاس جو ہوتے تو اس برس ہم تحفے میں تم پر لکھے ہوئے تم ہی کو شعر سناتے

People who shared love close

More like this